Breaking News

* 🛑🛑Don’t our institutions find the culprits guilty of blasphemy? 🛑🛑 *

*🛑🛑کیا ہمارے اداروں کو توہین رسالت صلی اللہ علیہ وسلم کے مجرم ہی نظر نہیں آتے؟🛑🛑*


A ban on blasphemous books alone is not enough to bring all those responsible to light. Those who write, print, and seal these books are guilty of blasphemy under 295C. *

گستاخانہ کتابوں پر صرف پابندی کافی نہیں تمام ذمہ داروں کو منظر عام پر لایا جائے۔یہ کتابیں لکھنے والے، چھاپنے والے اور سیل کرنے والے ۲۹۵سی کے تحت توہین رسالت ﷺ کے مجرم ہیں۔

The ban on them by the Punjab Assembly is a commendable step. But what is the reason that our institutions are found guilty of all other crimes but not guilty of blasphemy? *

پنجاب اسمبلی کی طرف سے ان پر پابندی مستحسن اقدام ہے۔مگر کیا وجہ ہے ہمارے اداروں کو باقی تمام جرائم کے مجرم مل جاتے ہیں مگر توہین رسالت ﷺ کے مجرم نہیں ملتے۔

Despite the passage of so many days, no progress has been made on the perpetrators of blasphemous books. What are the secret hands that protect such criminals every time? *

اتنے دن گزر جانے کے باوجود گستاخانہ کتابوں کے مجرموں کے بارے میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی۔وہ کونسے خفیہ ہاتھ ہیں جو ہر بار ایسے مجرموں کو تحفظ دیتے ہیں؟

Millions of lovers of the Prophet want to know who are doing this heinous act in our country? To date, not a single criminal has been punished under 295C. As a result, blasphemous culture is being encouraged. Is.*

کروڑوں عاشقانِ رسول ﷺ یہ جاننا چاہتے ہیں کہ ہمارے ملک میں یہ نہایت ہی گھٹیا حرکت کون لوگ کر رہے ہیں؟آج تک 295C کے تحت کسی ایک بھی مجرم کو سزا نہیں دی گئی۔جس کے نتیجے میں گستاخانہ کلچر کی حوصلہ افزائی ہو رہی ہے۔

Is every FIR filed under 295C based on a lie? The fact is that Qadianis and other non-Muslim forces are behind the blasphemy. They try to save the arrogant person from such an incident and get him foreign citizenship. *

کیا 295C کے تحت کاٹی گئی ہر FIR ہی جھوٹ پر مبنی ہوتی ہے؟حقیقت یہ ہے قادیانی اور دوسری غیر مسلم قوتیں جو توہین رسالت ﷺ کا دھندا کرتی، کرواتی ہیں۔ ایسے واقعہ پر گستاخ کو بچانے اوراسے غیر ملکی شہریت دلوانے کی کوشش کرتی ہیں

All blasphemous networks involved in the crime of three blasphemous books should be arrested and investigated. All the shops where the books were being sold should be sealed *

تین گستاخانہ کتابوں کے جرم میں شامل تمام گستاخانہ نیٹ ورک کو گرفتار کر کے تفتیش کی جائے۔ جہاں وہ کتابیں بیچی جارہی تھی ان تمام دکانوں کو سیل کر دیا جائے

Comment here